برطانوی فوجی کتیا کو اعلیٰ ترین عسکری ایوارڈ دینے کا فیصلہ

Discussion in 'World Today' started by khalid jamil malik, Apr 30, 2014.

  1. khalid jamil malik

    khalid jamil malik New Member

    Joined:
    Mar 1, 2010
    Messages:
    16,882
    Likes Received:
    1
    Location:
    in abu dhabi
    [​IMG]
    ساشا نامی کتیا 2008 میں لانس کورپورل کینتھ رو کے ہمراہ ماری گئی تھی۔ فوٹو: بی بی سی

    لندن: جانوروں کے حقوق اور اس سے متعلقہ امور دیکھنے والی عالمی تنظیم پی ٹی ایس اے نے افغانستان میں جنگ کے دوران ماری جانے والی برطانوی فوجی کتیا کو جانوروں کے اعلیٰ ترین عسکری ایوارڈ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق افغانستان میں جنگ کے دوران اپنے ہینڈلر کے ساتھ ہلاک ہونے والی برطانوی فوج کی 4 سالہ ساشا نامی لیبراڈور نسل کی کتیا کو متعدد فوجیوں اور عام شہریوں کی جان بچانے پر جانوروں کے اعلیٰ ترین عسکری ایوارڈ سے نوازنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ افغان جنگ میں ساشا کی ذمہ داری مختلف علاقوں میں فوجیوں کے ساتھ جا کر بارودی سرنگوں کا سراغ لگانا اور فوجیوں کے لیے محفوظ راستوں کا تعین کرنا تھا۔افغانستان میں جنگ کے دوران ساشا کو سیکنڈ بٹالین کے ساتھ تعینات رائل آرمی ویٹرنری کور کے ہینڈلرز کے ساتھ میدانِ جنگ میں بھیجا جاتا تھا تاہم 24 جولائی 2008 میں معمول کی گشت کے دوران طالبان کی جانب سے فوجی قافلے پر راکٹوں سے حملہ کیا گیا جس کے نتیجے میں فوجی کتیا اور لانس کورپورل کینتھ رو مار ےگئے تھے۔واضح رہے کہ ساشا کو پی ڈی ایس اے ڈکن میڈل دیا جائے گا جو جانوروں کے اعزازات میں اعلیٰ ترین فوجی اعزاز وکٹوریہ کراس کے برابر ہے، 1943 میں اس ایوارڈ کے قیام کے بعد سے اب تک ساشا 65 ویں جانور ہے جسے اس اعزاز سے نوازا گیا ہے۔

     
  2. habibbukhari

    habibbukhari Member Siasi Karkun

    Joined:
    Jan 19, 2010
    Messages:
    772
    Likes Received:
    4
    اگر کتیا کو انعام ملنے ہیں۔ تو پھر قاسم خان اور سلیمان خان کی ماں نے بھی کافی ریکارڈ توڑ دیۓ ہیں اور مزید توڑتی جا رہی ہیں ۔ یہ ناپاک جانور انکو دیکھکر شرما جاتی ہیں۔ وہ بھی ایوارڈ اور انعام کی حقدار ہیں۔
     

Share This Page